مس یو سلو

مس یو سلو

شہید سلمان سرور۔۔ سرور لاسٹ نیم سرور دیکھا تو یادوں کے کچھ دریچے کھلے۔ مجھے

Read More »

Reviews

Poetry

چمگادڑ
اپنوں سے ڈسے ہوئے لوگ !! باقی کی عمر چمگادڑ کی طرح درختوں سے الٹے لٹکے رہتے ہیں وہ رسی کو سانپ سمجھتے رہتے ہیں اور تنکے کو شہتیر ہر ٹہنی ، ان کو کانٹوں سے بھری لگتی ہے اور کوئی بھی پھول وہ دیکھ نہیں پاتے سائے کو بھوت سمجھ کر چیختے ہیں اور انسان کو سونگھتے ہی آدم بو آدم بو کہتے ہیں وہ ہزاروں سڑکیں ناپ لیں مگر پھر بھی کوئی راستہ ایسا دیکھ نہیں پاتے جس کے کنارے پر کوئی منزل ہو بغیر منزلوں کے فاصلوں کو طے کرنے والے اپنوں سے ڈسے یہ لوگ تمام عمر بس یونہی درختوں سے الٹے لٹکے رہتے ہیں ۔۔

مزید شاعری پڑھیے
آنکھ پر جو سایہ سا پڑ رہا ہے
میں تمہار ی تصویر پر اک نظم کہوں گا اس تصویر میں بائیں آنکھ پر جو سایہ سا پڑ رہا ہے اس کی اداسی پر لکھوں گا زمانوں کا دکھ تمہاری اس آنکھ میں کیوں اتر آیا ہے کیوں ؟؟ اس سوال کا جواب ڈھونڈوں گا میں تم پر اک نظم لکھوں گا اس نظم کو تم پڑھو گی اور کچھ لمحوں کے لیے اداس ہو جاؤ گی شائید ایک لمحے کے لئے تمہیں مجھ پر پیار بھی آجائے مگر اگلے ہی لمحے تم سنبھل جاؤ گی اور پھر سے دوسری سمت چلنے لگو گی ۔۔ میں پھر بھی ۔۔۔۔ہاں پھر بھی ! تمہاری تصویر پر اک نظم لکھوں گا ۔۔
Click Here

ناسمجھی

کسی کی غرض کی پو ٹلی تھی اور کسی کی ہوس کی کوء انا کا بوجھ اٹھا لیا تھا تو کوئی نظریات کے چھابے ایک میں ہی کملی اس سب کو پیار و خلوص سمجھ کے خوشی سے دوہری چوہری ہو تی رہی

مزید شاعری پڑھیے
Previous
Next