کرونا بے بی!!!

Published on (April 22, 2021)

سالگرہ مبارک۔۔۔
تم سال پہلے پیدا ہو ئے تھے۔۔تم سال بھر کے ہو بھی گئے
میں تم کو گود میں کھلانا چاہتی تھی۔۔
مگراس بات کا فیصلہ کرنے والوں نے کہا؛
“تمہارا رشتہ اب کہیں دور جا پڑا ہے، اس لئے ابھی تمہارا نمبر نہیں آیا ”
بچے!تمہارے بابا جب میری گود میں کھیلتے تھے تو
فیصلے کرنے والی میری بہن ہوا کرتی تھی
میں سوچ میں پڑ گئی ہوں کہ کیا فیصلہ کرتیں تمہارے بابا کی ماما
جو اگر اس وقت یہ وبا پھیل جاتی تو۔۔۔۔۔
خیر اب تو میں تمہیں دور دور سے دیکھ کے ہی خوش ہو جاتی ہوں
ایک دن مجھے موقع ملا تمہیں قریب سے دیکھنے کا
تم میری شکل دیکھ کر چیخ پڑے
کیونکہ تم جانتے نہیں تھے
کہ گرینڈ پیرنٹس اور پیرنٹس کے علاوہ بھی کوئی رشتے ہو تے ہیں
تمہارارا کیا قصور۔۔۔۔تمہارا تو کوئی قصور ہی نہیں۔
اس کمینے کرونا نے رشتوں کو قطاروں میں لا کرکھڑاکر دیا ہے۔
ہر رشتے کا باری باری نمبر آتا ہے۔۔
جو زیادہ قریبی رشتہ ہوتا ہے وہ کرونا سے محفوظ قرار پا جاتاہے
رشتہ تھوڑا دور پار کا ہو تو وبا پھیلنے کا خطرہ بڑھ جا تا ہے۔
ہم جب رشتوں میں دوریوں کی کہانی پڑھا کرتے تھے تو
بات صنعتی انقلاب سے شروع ہو تی تھی،کیپٹلزم اور سارے ازم
نفسا نفسی اور مادہ پرستی سب قصور وار گردانے جاتے تھے
لیکن اے بے بی!! وبائی دنوں میں پیدا ہو نے والے بچے!
تمہیں جب رشتوں کے گُم ہو نے کی کہانی سنائی جائے گی
تو چپ کر کے سارے کا ساراالزام اس موذی کرونا کے سرڈال دیا جائے گا۔

(روبینہ فیصل)

Leave a Reply

avatar
  Subscribe  
Notify of